Education

روضہ رسول پر سرخ دائرہ میں موجود کھڑکی اس آرٹیکل کو ضرور پڑھیں دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں

بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں بارش نہیں برس رہی تھی قحط سالی پڑ گئی .کچھ صحابی اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها کی خدمت میں حاضر ہوئے اور عرض کی کہ اماں جان کوئی ایسا وظیفہ کوئی ایسا امر بتائیں کہ قحط سالی ختم ہو جائے اور ابر رحمت برسنے لگے.

تو اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ طاہرہ طیبہ رضی اللہ عنها فرمانے لگیں کہ روضئہ رسولؐ کی چھت پر جو روشندان یعنی کھڑکی رکھی گئی ہے اسے کھول دو.جب روضئہ رسول کا اور آسمان کا سامنہ ہوا تو خوب بارش برسنے لگی یہاں تک کہ لوگ دوبارہ ام المومنین کی بارگاہ میں حاظر ہوئے اور بارش روکنے کے وظائف و تدابیر دریافت کرنے لگے.

تو اماں عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها نے فرمایا کہ روضئہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی وہ کهڑکی دوبارہ بند کر دو.چنانچہ کھڑکی بند کرتے ہی بارش تھم گئی. اگر یہ معلومات اچھی لگے تو اپنے دوست احباب کے ساتھ بھی شیئر کریں.اور مجھے بھی اپنی دعائوں میں یاد رکھیئے جزاک اللہ خیر

Comments

comments

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top