Education

عورتوں کی زندگی مردوں سے زیادہ لمبی کیوں ہوتی ہے اس آرٹیکل کو ضرور پڑھیں دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں

دنیا میں اس وقت 100سال سے زائد عمر کے جتنے بھی لوگ ہیں ان میں بھاری اکثریت خواتین کی ہے۔ اعدادوشمار کے مطابق اس وقت دنیا میں 100سال کی عمر کو پہنچنے والے 5افراد میں صرف 1مرد ہے اور باقی چار خواتین ہیں۔مرد جسمانی طور پر خواتین سے مضبوط ہوتے ہیں،

زیادہ قدآور ہوتے ہیں اور دیگر کئی حوالوں سے بھی خواتین سے بہتر کارکردگی دکھاتے ہیں لیکن جب طویل العمری کی بات آئے تو سوال اٹھتا ہے کہ خواتین کی عمر مردوں سے زیادہ کیوں ہوتی ہے؟ 80ءکی دہائی میں برطانوی فزیشن اور ماہر جینیات سر سرل کلارک نے تھیوری پیش کی تھی کہ ’جب مرد ریٹائر ہوتے ہیں تو وہ معمول کی زندگی ترک کر دیتے ہیں، زیادہ آرام کرتے ہیں اورزیادہ کھانا شروع کر دیتے ہیں، وہ نہ صرف جسمانی بلکہ ذہنی طور پر بھی غیرمتحرک ہو جاتے ہیں اور اکثر موٹاپے کا شکار ہو جاتے ہیں۔ ان کے برعکس خواتین اس عمر میں بھی معمول کی زندگی جاری رکھتی ہیں۔ وہ کھانا بناتی ہیں، سودا سلف خریدنے جاتی ہیں،

گھر کی صفائی کرتی ہیں، کپڑے دھوتی ہیں، وغیرہ وغیرہ۔چنانچہ خواتین کا ریٹائرمنٹ کے بعد بھی متحرک رہنا ہی ان کی طویل العمری کا راز ہے۔“تاہم سرل کلارک کی اس تھیوری کے حق میں کوئی ٹھوس سائنسی شواہد آج تک دستیاب نہیں ہو سکے تھے۔اب سرل کلارک کی تھیوری کے دہائیوں بعد سائنسدانوں نے خواتین کے طویل عمر پانے کی حقیقی وجہ بتا دی ہے۔ نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ”دراصل مردوں کے کم عمر پانے کی وجہ ان کی پیدائش سے ہی شروع ہو جاتی ہے کیونکہ انہیں شروع سے ہی ایک کٹھن زندگی کا سامنا کرنا پڑتا ہے

لڑکیوں کی نسبت لڑکوں کی قبل ازوقت پیدائش ہونے کے امکانات 14فیصد زیادہ ہوتے ہیں اورماں کے پیٹ میں لڑکیوں کی نسبت ان کے پھیپھڑوں کی نشوونما کم ہونے کے امکانات حیران کن طور پر 2گنا زیادہ ہوتے ہیں۔اس کے علاوہ لڑکوں کے پیدائش سے قبل یا فوری بعد دماغی صلاحیتوں کے بگاڑ کا شکار ہونے، دماغ مفلوج ہونے اور دیگر پیدائشی معذوریوں کا شکار ہونے کے امکانات بھی لڑکیوں سے زیادہ ہوتے ہیں۔ان کے برعکس لڑکیاں ماں کے پیٹ میں اس قدر تیزی سے نشوونما پاتی ہیں کہ پیدائش کے وقت لڑکی کی نشوونما ڈیڑھ ماہ کی عمر کے لڑکے کے برابر ہوتی ہے۔یہی وجہ ہے کہ وہ لڑکوں سے پہلے چلنا اور بولنا شروع کر دیتی ہیں۔اس سب سے بڑھ کر خطرناک چیز یہ ہے کہ لڑکوں کی پیدائش کے پہلے سال میں ہی موت ہو جانے کے امکانات لڑکیوں کی نسبت ۔ ۔فیصد زیادہ ہوتے ہیں اور اگر وہ زندہ رہیں تو بھی انہیں ہائپرایکٹیوٹی، خودفکری، ٹوریٹیز سنڈروم اور ہکلانے جیسی بیماریاں لڑکیوں کی نسبت سے گنا زیادہ لاحق ہونے کا خطرہ اوراتنا ہی پڑھنے کی صلاحیت کم ہونے کا خدشہ ہوتا ہے۔

زندگی میں آگے چل کر مرد جن چیزوں میں خواتین سے بہتر ہوتے ہیں ان میں ایک ’خطرات کا مول لینا‘ بھی شامل ہیں۔ نوجوانی کی دہلیز پر قدم رکھتے ہیں مرد خطرات مول لینا شروع کر دیتے ہیں جو ان کے طویل عمر پانے کے امکانات کو مزید کم کر دیتے ہیں۔اس کے علاوہ مردوں کے منشیات استعمال کرنے اور سگریٹ نوشی کرنے کے امکانات بھی خواتین کی نسبت کہیں زیادہ ہوتے ہیں۔ یہ تمام عوامل ہیں جو مردوں کی عمر کو محدود کرتے اور خواتین کو طویل العمر بناتے ہیں۔“

Comments

comments

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top