Education

مظلوم کو مایوس مت بناؤ اس آرٹیکل کو ضرور پڑھیں دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں

آئی ایس پی آر نے کمال شفقت سے کام لیتے ہوئے اہل تشیع سے متعلق اہل سنت کے غم و غصہ کو دور کرنے کی کوشش کی ہے جو سانحہ تعلیم القرآن کے سبب پایا جاتا ہے۔ یہ اس نوعیت کی پہلی کوشش نہی ہے کہ جب ارباب اقتدار نے ” باہمی اتحاد و محبت ” کے لیے کام کیا ہو۔ اس سے پہلے میڈیا کے ذریعے اس واقعہ اور اس نوعیت کے واقعات کو کم وقت اور کم معلومات دے کر، بسا اوقات یکسر خبر کی نوعیت بدل کر اصل واقع کو چھپایا گیا ہے۔ اپنے زعم میں ایسا کر کے انہوں نے عوام میں انتشار، فتنہ، نفرت، تفرقہ پھیلنے کی کوشش کو ناکام کیا ہے۔

مظلوم اس کے ساتھ محبت کرتا ہے جو ظلم کے خلاف اس کے ساتھ کھڑا ہوتا ہے، اس کی مدد کرتا ہے۔ ارباب اقتدار کو یہ خیال ہونا چاہیے کہ چھوٹے تب تک بڑے کو بڑا مانتے تھے جب تک وہ دوسرے چھوٹے کے مقابلہ میں اسے غیرجانبدار سمجھتے ہیں۔ جب ایک چہیتا، لاڈلا بن جائے تو دوسری جانب بغاوت، نفرت پیدا ہوتی ہے۔

محترم! آپ غلط معلومات دے کر معاملے کو اور جانب موڑ کر اپنا اعتماد، محبت کھو رہے ہیں۔ خدارا! مظلوم کی اشک شوئی کیجیے۔ سی سی ٹی وی فوٹیج کے وہ چہرے جو ویڈیو کی صورت انٹرنیٹ پر اہل سنت کے دلوں کا خون کر رہے ہیں، وہ آج تک نا معلوم کیوں ہیں؟ آپ کے بقول آپ کی ایجنسیاں جہاں سے چاہے معلومات حاصل کر سکتی ہیں۔

آئیں، قومی اتحاد و محبت کا نسخہ کیمیا ہم بتاتے ہیں۔ جس زمین پر عدل ہو گا قدرت وہاں امن قائم رکھنے میں معاون بنے گی۔ مظلوم کی اشک شوئی کرنے سے ظلم کا خا تمہ با لخیر ہو گا۔ مجرم کو سزا ملنے سے شرارتی عناصر کی ہمت پست ہو گی۔

اگر آپکو ہماری پوسٹ اچھی لگی ہو تو دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں شکریہ

Comments

comments

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top