educationa

عمر بڑھنے کے ساتھ جان لیوا امراض سے بچنا چاہتے ہیں؟ اس آرٹیکل کو ضرور پڑھیں دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں

عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ متعدد امراض بھی انسان کو اپنا شکار بنانے لگتے ہیں مگر اپنی غذا میں معمولی تبدیلی لاکر آپ خود کو اس سے بچا سکتے ہیں۔ یہ بات نیدرلینڈ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

گرونگین یونیوسٹی میڈیکل سینٹر کی تحقیق میں بتایا گیا کہ معدے میں صحت کے لیے بہتر بیکٹریا کی سطح برقرار رکھنے میں مددگار غذا کا استعمال عمر کے ساتھ لاحق ہونے والے لگ بھگ تمام امراض سے بچاتا ہے۔

ان بیکٹریا کا توازن بگڑنا ممکنہ طور پر متعدد امراض کا باعث بنتا ہے جن میں فالج، ڈیمینشیا، امراض قلب یا شریانوں سے متعلق امراض قابل ذکر ہیں۔

تحقیق کے مطابق یہ بات تو پہلے سے معلوم تھی کہ درمیانی عمر یا بوڑھے افراد کے معدوں میں بیکٹریا کا توازن نوجوان افراد سے مختلف ہوتا ہے مگر اب معلوم ہوا کہ یہ تبدیلی مختلف امراض کا باعث بنتی ہے۔

یہ واضح نہیں ہوسکا کہ عمر بڑھنے کے ساتھ معدے میں ورم آتا ہے یا یہ ورم بڑھاپے کا باعث بنتا ہے، مگر یہ واضح ہے کہ اس سے بچنا متعدد امراض سے بچاتا ہے۔

اس تحقیق کے دوران بوڑھے چوہوں پر تجربات کے دوران معدے میں بیکٹریا کے مجموعے کو دیکھا گیا جو کہ انسانوں کی طرح عمر کے ساتھ بدلتا ہے۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ نقصان دہ بیکٹریا کی مقدار بڑھنے سے موٹاپے، ذیابیطس، ذہنی بے چینی، آٹزم اور کینسر وغیرہ لاحق ہوسکتے ہیں۔

محققین کا کہنا تھا کہ اگر صحت بخش غذا کا استعمال کیا جائے تو صحت کے لیے فائدہ مند بیکٹریا کی موجودگی کو متوازن حد تک برقرار رکھا جاسکتا ہے جس سے عمر بڑھنے سے لاحق ہونے والے امراض کو روکا جاسکتا ہے۔

اپنی غذا میں مچھلی، گریوں، زیتون کے تیل، پھلوں، سبزیوں کا زیادہ استعمال جبکہ سرخ گوشت کو کم کھانا مگر غذا سے نہ نکالنا اس حوالے سے فائدہ مند ہوسکتا ہے۔

Comments

comments

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top