Facebook

پسند کی شادی کا دردناک انجام اس آرٹیکل کو ضرور پڑھیں دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں

پسند کی شادی کا المناک انجام، بھائی کی عیادت کرنے گئے تو سالوں نے اسلحہ کے زور پر اغوا کرلیا، کمرے میں کئی روز تشدد بھوکا پیاسا رکھنے کے بعد طلاق نامہ انگوٹھے لگوالئے، حالت غیر ہونے پر گھر کے دروازے کے باہر پھینک کر فرار، داد رسی اور اندراج مقدمہ کیلئے تھانہ گئے تو ایس ایچ او نے دھکے دے کر تھانہ سے باہر نکال دیا۔۔

روزنامہ خبریں کے مطابق تھانہ باغبانپورہ کا رہائشی علی رضا ولد خورشید سکنہ اسلام باغبانپورہ محلہ چوہدری چوک جس کی شادی حنا علی ولد محمد اقبال سے ہوئی چند روز بعد حنا علی کو دھوکے سے کہ تمہارا بھائی ندیم اقبال زندگی اور موت کی کشمکش میں ہے جو لاہور جناح ہسپتال داخل ہے، مَیں اور میری بیوی جناح ہسپتال لاہور پہنچے تو سالے کی تیمارداری کے بعد جب گھر واپس آنے لگے تو میرے سالے اظہر اور عمران نامعلوم ساتھیوں کی مدد سے کہ آپ کو لاری اڈے تک چھوڑ دیتے ہیں راستے میں اسلحہ کے زور پر اغوا کرکے شکرگڑھ لے گئے اور میری بیوی کو مجھ سے علیحدہ کرکے مجھے ایک کمرے میں بند کرکے تشدد کرتے رہے اور اسلحہ کے زور پر طلاق نامے پر انگوٹھے بھی لگوالئے،۔

تشدد سے حالت غیر ہونے پر گوجرانوالہ گھر کے باہر پھینک کر فرار۔متاثرہ شخص اپنے گھر والوں کے ہمراہ تھانہ باغبانپورہ پہنچا تو ایس ایچ او کو تمام تفصیلات سے آگاہ کیا اور اندراج مقدمہ کیلئے درخواست دائر کی مگر ایس ایچ او نے ایک نہ سنی اور متاثرہ نوجوان کو دھکے دے کر تھانے سے باہر نکال دیا۔ علی رضا نے سی پی او گوجرانوالہ محمد اشفاق خان سے اپیل کی ہے کہ بااثر ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے اور میری بیوی کو بازیاب کروایا جائے۔

Comments

comments

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top